0

پانی میں اگنے والا سوسن کا سب سے بڑا پودا دریافت

بولیویا: بولیویا کی دور دراز آب گاہوں میں پایا جانے والا واٹر للی (سوسن) کا سب سے بڑا پودا دریافت ہوا ہے جس کا پتہ وسیع ترین ہے اور ساتھ میں یہ ایک نئی نوع (اسپیشیز) بھی ہے جسے وکٹوریا بولیویانا کا نام دیا گیا ہے۔

کنول کی طرح پھیلنے والا اس کا پتہ لگ بھگ 3.2 میٹر وسیع ہے اور دوم اس کا پھول انسانی ہاتھ سے بھی بڑا ہوتا ہے۔ برطانیہ میں کیو گارڈن سے وابستہ سائنسداں نتالیا زولیمسکا نے بتایا کہ اگر اس کا پتہ اٹھایا جائے تو اس کا وزن لگ بھگ ایک نومولود بچے جیسا ہوتا ہے۔ نظری طور پر اس کا ایک پتہ 80 کلوگرام انسان کا وزن سہار سکتا ہے۔ اگرچہ اب تک اس کی آزمائش نہیں کی گئی ہے۔

2016 میں واٹر للی کے بعض بیج برطانیہ پہنچائے گئے تھے جنہیں کیو گارڈن میں کاشت کیا گیا تھا۔ انہیں ایک ماہرِ نباتیات کارلوس مگڈالینا نے اگایا تھا۔ لیکن جلد ہی انہیں یہ احساس ہوا کہ اگنے والے پودے اصل سے مختلف ہیں۔ 2019 میں وہ بولیویا گئے جہاں جنگل کے فطری ماحول میں واٹر للی کا مطالعہ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں