0

پلاسٹک کی بجائے پھلوں اور سبزیوں کو تازہ رکھنے والا اسپرے

نیویارک: مغربی ممالک میں پھل اور سبزیاں پلاسٹک میں بند کرکے فروخت کی جاتی ہیں اور اب یہ چلن پاکستان میں بھی عام ہوگیا ہے جس سے ڈھیروں ڈھیر پلاسٹک پیدا ہوتا ہے۔ لیکن پلاسٹک آلودگی سے بچنے کے لیے ماہرین نے پودوں کے ریشوں سے بنا عین پلاسٹک جیسا ریشہ بنایا ہے جسے اسپرے کرکے نہ صرف پھلوں اور سبزیوں کو جراثیم سے پاک رکھا جاسکتا ہے بلکہ ان کی تازگی کا وقت 50 فیصد تک بڑھ جاتا ہے۔

یہ انتہائی باریک اور ماحول دوست کوٹنگ پھلوں سبزیوں سمیت کھانے کی پیکنگ میں بھی استعمال ہوسکتی ہے۔ اس طرح نقل و حمل میں ان کی خرابی کے علاوہ اجناس کو جلدی باسی ہونے سے بھی بچا سکتی ہے۔ بڑے پیمانے پر اس کی تیاری سے پوری دنیا میں لاکھوں کروڑوں کلوگرام پلاسٹک کی سالانہ بچت ہوسکتی ہے جو پہلے ہی ماحول کے ہر گوشے میں گھل کر زندگی کو اجیرن بنا رہا ہے۔

رٹگرز یونیورسٹی سے وابستہ نینوسائنس اور نئے مادوں کے ماہر ڈاکٹر فلپ دیموکریتوف اور ان کے ساتھیوں نے دو مقاصد کے تحت یہ اختراع کی ہے۔ اول پلاسٹک کے متبادل ماحول دوست مٹیریئل بنایا جائے اور دوم خوراک کو تادیر تازہ بھی رکھا جاسکے۔ اب پودوں کے نشاستے (اسٹارچ) پر مبنی یہ پیکنگ دونوں مسائل کا تسلی بخش حل فراہم کرتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں